Rickshaw-stricken Pakistani woman’s heart-wrenching talk that every Pakistani’s head will be shamed

آج کل ہر دوسرا شخص کورونا وائرس کی وجہ سے پریشان ہے مگر ہماری موجود حکومت نے ان لوگوں کے بارے میں ابھی تک کچھ نہیں سوچا اور نہ ہی انکی مدد کے لیے کسی بھی طرح کی کوئی جدوجہد کی ہے ۔

مگر آج ہم آپ کو لاہور سے تعلق رکھنے والی ایک بہادر خاتون سے ملتے ہیں جو لاہور کی سٹرکوں پر رکشہ چلے کر اپنا اور اپنےگھر والوں کا پیٹ پال رہی ہے ۔

اس خاتون کا نام صائمہ ہے ۔اس خاتون کی عمر 48سال ہے اس خاتون کے ساتھ گفتگو کے دوران بتایا کہ انکے پانچ بچے ہیں تین بیٹیاں اور دو بیٹے ہیں ۔اور خاوند مزدوی کرتا ہے ۔

اس ماں جی سے سوال پوچھا گیا کہ کیا آپ کے گھر میں آج کے لیے کھانے کو کچھ پڑا ہے تو اس ماں کی آنکھوں میں آنسو آگئے اور انکا کہنا تھا کہ نہیں آج گھر میں بھی کھانے کے لیے کچھ بھی نہیں ہے ۔

اس خاتون کی مزید کہانی انکی زبانی ۔

Check Also

Crypto marketplace Coinbase ready to list on US Stock exchange

Cryptocurrency exchange Coinbase planning to take place in US stock while its still need permission …